اورماڑہ کے قریب دہشت گردوں سے جھڑپ، 7 ایف سی اہلکار، 7 سیکیورٹی گارڈ شہید

0
4

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کا کہنا ہے کہ کوسٹل ہائی وے پر اورماڑہ کے قریب سیکورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان جھڑپ ہوئی ہے، جس میں ایف سی بلوچستان کے7 بہادرجوان اور سات سیکیورٹی گارڈ شہید ہوئے ہیں۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ او جی ڈی سی ایل کا قافلہ سیکورٹی فورسز کی حفاظت میں گوادر سے کراچی جارہا تھا، سیکیورٹی فورسز نے موثر کارروائی کرتے ہوئے او جی ڈی سی ایل کے قافلے کو علاقے سے بحفاظت نکالا۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ جھڑپ کے دوران دہشت گردوں کو بھاری نقصان ہوا، جبکہ جھڑپ کے دوران ایف سی بلوچستان کے7 بہادر جوان اور سات سیکیورٹی گارڈز بھی شہید ہوئے۔

ترجمان آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ شہداء میں صوبیدار عابد حسین، نائیک محمد انور سپاہی محمد نوید، لانس نائیک عبداللطیف بھی شہید ہوئے۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ شہداء میں لانس نائیک افتخار احمد، سپاہی محمد وارث اور سپاہی عمران خان شامل ہیں۔

دہشت گردوں سے جھڑپ کے دوران شہداء میں حوالدار (ر)سمندرخان، محمد فواد اللّٰہ، عطا اللّٰہ وارث خان، عبدالنافع، شاکر اللّٰہ، عابد حسین بھی شہداء میں شامل ہیں۔
Army 1
آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کا محاصرہ کرلیا، دہشتگردوں کی تلاش جاری ہے۔

ترجمان آئی ایس پی آر نے کہا کہ بلوچستان میں امن و ترقی کو نقصان پہنچانے کی دشمن کی بزدلانہ کارروائی کامیاب نہیں ہونے دیں گے، بلوچستان میں اقتصادی ترقی کا کام رکنے نہیں دیا جائےگا۔

آئی ایس پی آر نے کہا کہ بزدلانہ حملہ بلوچستان میں امن کو سبوثاژ نہیں کرسکتا، ایسی بزدلانہ کارروائیوں سے فورسز کا عزم بلند ہوتا ہے، بلوچستان میں ترقی، امن و استحکام کو سبوتاژ کرنے کوششیں کبھی کامیاب نہیں ہوں گی، ایسی بزدلانہ کارروائیوں سے سیکورٹی فورسز کا عزم مزید بلند ہوتا ہے۔

کوئی تبصرہ نہیں