مانسہرہ بھوگڑمنگ کے رہائشی نوجوان کا لرزہ خیز قتل،قاتل کون تھے اورکیا وجوہات تھی ؟ جانئے مزید…

0
104

مانسہرہ ( شیر افضل گجر) کے علاقے بھوگڑمنگ کے رہائشی نوجوان کو لڑکی سے تعلق کے شک کی بنیاد پر تین سگے بھائیوں نے موسیٰ دا مصلہ کے مقام پر لے کر قتل کر کے نعش چورامالی میں پھینک دی، پولیس نے نامزد ملزمان کو گرفتار کر کے چالیس دن کے بعد لاش برآمد کر لی،

تھانہ شنکیاری میں مقتول میاں ہاشم کے ورثاء کے درج کرائے گئے مقدمے کی تفصیل کے مطابق چالیس روز قبل 18 سالہ میاں ہاشم کو اس کے تین ماموں ذاد (کزنز) بشیر، نذیر اور فاروق سیر تفریح کیلئے سیاحتی علاقے موسیٰ دا مصلیٰ (یوسی جبڑ دیولی) لے گئے جہاں اسے قتل کر کے نعش پھینک دی گئی

1
2
3
اور گھر آ کر بتایا کہ میاں ہاشم لاپتہ ہو گیا ورثاء کے نامزد کرنے پر ملزمان نے پولیس کو حقیقت بتا دی جس کے مطابق ملزمان نے اپنی بہن سے تعلق کے شک کی بنیاد پر میاں ہاشم کو قتل کر کے نعش (چور گلی) موسیٰ دا مصلیٰ کے مقام پر پھینک دی، پولیس نے ملزمان کی نشاندہی پر لاش برآمد کر کے تینوں ملزمان کو قتل کا ملزم نامزد کر کے ان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا، ڈی ایس پی شنکیاری، ایس ایچ او تھانہ شنکیاری نے نفری کے ہمراہ 12 گھنٹے کے آپریشن کے بعد لاش برآمد کی، ضروری کاروائی کے بعد لاش ورثاء کے حوالے کر دی گئی۔

کوئی تبصرہ نہیں