Sargaram | Newspaper

اتوار 21 اپریل 2024

ای-پیپر | E-paper

اسلام آباد: مسلم لیگ ن کی چیف آرگنائزر اور سینئر نائب صدر مریم نواز، چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری اور بانی پی ٹی آئی عمران خان کے کاغذات نامزدگی پر اعتراض دائر کر دیا گیا۔

Share

اسلام آباد: مسلم لیگ ن کی  چیف آرگنائزر اور سینئر نائب صدر  مریم نواز، چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری اور بانی پی ٹی آئی عمران خان کے کاغذات نامزدگی پر اعتراض دائر کر دیا گیا۔

مسلم لیگ ن کی چیف آگنائزر اور سینئر نائب صدر مریم نواز پر جعلی دستخط اور سزا یافتہ ہونے پر، بانی پی ٹی آئی عمران خان پر سزا یافتہ ہونے اور بلاول بھٹو  کے خاغزات نامزدگی پر بیک وقت دو پارٹیوں سے منسوب ہونے کی بنا پر  اعتراض دائر کیا گیا۔

سرگودھا کے شہری کی جانب سے ریٹرننگ آفیسر کو درخواست دے دی گئی جس میں الزام عائد کیا گیا کہ امیدوار پی پی 80 (پریم نواز)کے دستخط جعلی کیے گئے ہیں۔درخواست گزار نے مزید کہا کہ مریم نواز مختلف مقدمات میں سزا یافتہ ہیں، اعتراض لگا کر کاغذات مسترد کیے جائیں۔

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کے کاغذات نامزدگی پر اعتراض لاہور کے حلقہ این اے 127 سے شہری کی جانب سے دائر کیا گیا۔  درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ بلاول بھٹو نے اپنے کاغذات نامزدگی میں پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرینز سے وابستگی ظاہر کی اور پاکستان پیپلز پارٹی اور پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹرینز الگ الگ سیاسی جماعتیں ہیں۔

درخواست میں مزید کہا گیا کہ بلاول بھٹو زرداری پیپلز پارٹی کے چیئرمین اور آصف زرداری پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرینز کے صدر ہیں، الیکشن ایکٹ 2017 کے مطابق ایک شخص ایک وقت میں ایک جماعت کا رکن ہوسکتا ہے، لہذا یہ الیکشن ایکٹ کی خلاف وزری ہورہی ہے۔

لاہور کا حلقہ این اے 122 میں بانی پی ٹی آئی عمران خان کے کاغذات پراعتراض مسلم لیگ ن کے امیدوار میاں نصیر کی جانب سے دائر کیا گیا۔

میاں نصیر نے عمران خان کے کاغذات نامزدگی پر اعتراض کی درخواست ریٹرننگ افسر میں جمع کرائی جس میں کہا گیا کہ بانی پی ٹی آئی سزا یافتہ ہیں، لہٰذا وہ الیکشن لڑنے کے اہل نہیں۔

واضح رہے کہ8 فروری کے عام انتخابات کیلئے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کا سلسلہ آج تیسرے روز بھی جاری ہے۔

Share this Article
- اشتہارات -
Ad imageAd image