Sargaram | Newspaper

اتوار 26 مئی 2024

ای-پیپر | E-paper

بھارتی قبضے کو 76 سال مکمل، کشمیری دنیا بھر میں یوم سیاہ منا رہے ہیں

Share

اسلام آباد: جنت نظیر وادی کشمیر پر بھارت کے غاصبانہ قبضے کو 76 سال مکمل ہونے کے موقع پر آزاد و مقبوضہ وادی اور  پاکستان سمیت دنیا بھر میں کشمیری آج یوم سیاہ منا رہے ہیں۔

کشمیر پر بھارتی فوجی قبضے کے خلاف کنٹرول لائن کے دونوں جانب کشمیری عوام آج یوم سیاہ منا رہے ہیں۔  اس موقع پر صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی اور نگراں وزیراعظم انوار الحق کاکڑ نے اپنے خصوصی پیغامات میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی  کرتے ہوئے کہا ہے کہ 27 اکتوبر کشمیریوں کے لیے سیاہ ترین دن ہے، جب کشمیریوں کی جائز خواہشات کا گلا گھونٹا گیا۔

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے یوم سیاہ کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا کہ  بھارت نے کشمیریوں کو اپنا فیصلہ خود طے کرنے سے  طاقت کے زور پر روکا۔ بھارتی زیر قبضہ جموں و کشمیر کے عوام نے دہائیوں سے قابض فوج کے ظلم و ستم برداشت کیے ہیں جب کہ طاقت کا استعمال کرکے بھی بھارت کشمیریوں کے عزم کو متزلزل کر سکا ہے نہ کشمیریوں کے حق خود ارادیت کے جذبے کو کچلنے میں کامیاب ہوا۔

صدر مملکت نے کہا کہ  بھارت کے 5 اگست 2019ء کے غیر قانونی اقدامات عالمی قوانین کی کھلی خلاف ورزی ہیں۔

نگراں وزیراعظم انوار الحق کاکڑ نے کشمیر یوم سیاہ کے موقع پر اپنے پیغام  میں کہا ہے کہ آج 27 اکتوبر کو جموں و کشمیر کے بڑے حصے پر بھارت کے غاصبانہ  قبضے کو 76 سال بیت گئے۔ 27 اکتوبر 1947 کو، بھارت نے پہلی بار اپنی فوجوں کو غیر قانونی طور پر مقبوضہ جموں و کشمیر میں اتارا۔ تب سے آج تک بھارت  نے اس علاقے پر زبردستی قبضہ جاری رکھا ہوا ہے۔

نگراں وزیراعظم نے کہا کہ گزشتہ 76 برسوں میں بھارت نے جموں و کشمیر پر اپنی غیر قانونی حکمرانی کو برقرار رکھنے کے لیے مختلف ہتھکنڈے  آزمائے ہیں۔ تاہم، بھارت نے5 اگست 2019 سے ایک مذموم مہم کا آغاز کر رکھا ہے جس کے تحت  کشمیریوں کو ان کی اپنی سرزمین میں ایک بے اختیار کمیونٹی میں تبدیل کرنے کی گھناؤنی سازش زوروں پر ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت کو 5 اگست 2019 کے یکطرفہ اور غیر قانونی اقدامات کو واپس لینے چاہییں۔ بھارت کو جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو روکنا ہو گا اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی متعلقہ قراردادوں پر عمل درآمد کروانا ہو گا ۔

پاکستان ہمیشہ کی طرح اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑا ہے۔ پاکستان کشمیریوں کے ناقابل تنسیخ حق خود ارادیت کے حصول کے لیے ان کی منصفانہ جدوجہد کے لیے اپنی مکمل اخلاقی، سفارتی اور سیاسی حمایت جاری رکھے گا۔

Share this Article
- اشتہارات -
Ad imageAd image