Sargaram | Newspaper

اتوار 03 مارچ 2024

ای-پیپر | E-paper

سونف کھانا پسند کرتے ہیں؟ تو اس کے فوائد بھی جان لیں

Share

سونف کا استعمال تو لگ بھگ ہر گھر میں ہی ہوتا ہے۔

پکوانوں میں استعمال کرنے کے ساتھ ساتھ صدیوں سے سونف کو مختلف طبی مسائل سے بچنے کے لیے کھایا جاتا ہے۔

مگر جدید طبی سائنس نے سونف کے کن فوائد کو ثابت کیا ہے؟

متعدد مفید غذائی اجزا سے بھرپور

سونف میں وٹامن سی، کیلشیئم، آئرن، میگیشم، پوٹاشیم، غذائی فائبر اور Manganese جیسے اجزا موجود ہوتے ہیں جبکہ کیلوریز کی مقدار بہت کم ہوتی ہے۔

Manganese وہ اہم جز ہے جو میٹابولزم، خلیات کے تحفظ، ہڈیوں کی صحت، بلڈ شوگر کو کنٹرول کرنے اور زخم بھرنے جیسے افعال میں مدد فراہم کرتا ہے۔

اسی طرح پوٹاشیم، میگنیشم اور کیلشیئم بھی صحت کے لیے اہم ہوتے ہیں۔

متعدد طاقتور نباتاتی مرکبات کا حصول

سونف میں متعدد اینٹی آکسائیڈنٹس نباتاتی مرکبات موجود ہوتے ہیں۔

تحقیقی رپورٹس سے ثابت ہوا ہے کہ اینٹی آکسائیڈنٹس سے بھرپور غذاؤں کے استعمال سے دائمی امراض جیسے ذیابیطس ٹائپ 2 اور امراض قلب سے متاثر ہونے کا خطرہ کم ہوتا ہے۔

سونف میں 28 سے زیادہ مرکبات موجود ہوتے ہیں جو جراثیم اور ورم کش خصوصیات کے حامل ہیں۔

سانس کی بو سے نجات

یہ سانس کو مہکانے کے لیے بھی بہترین ہے۔

کھانے کے بعد کچھ مقدار میں سونف کھانے سے سانس میں بو پیدا نہیں ہوتی بلکہ سانس خوشبودار ہوجاتی ہے۔

دل کی صحت کے لیے مفید

سونف کو کھانے سے دل کی صحت کو بھی فائدہ ہوتا ہے۔

اس میں موجود فائبر سے امراض قلب کا خطرہ بڑھانے والے عناصر جیسے ہائی کولیسٹرول کو کنٹرول کرنے میں مدد ملتی ہے۔

تحقیقی رپورٹس میں بھی دریافت کیا گیا ہے کہ فائبر سے بھرپور غذاؤں کے استعمال سے امراض قلب کا خطرہ کم ہوتا ہے۔

فائبر سے ہٹ کر سونف میں میگنیشم، پوٹاشیم اور کیلشیئم جیسے اجزا بھی موجود ہوتے ہیں جو دل کو صحت مند رکھنے میں کردار ادا کرتے ہیں۔

Share this Article
- اشتہارات -
Ad imageAd image