Sargaram | Newspaper

اتوار 21 اپریل 2024

ای-پیپر | E-paper

میں صبح وزیرِ اعظم تھا، شام میں ہائی جیکر بنا دیا گیا: نواز شریف

Share

مسلم لیگ ن قائد نواز شریف کا کہنا ہے کہ ہم ترقی والے لوگ ہیں،  میں صبح وزیراعظم تھا شام میں ہائی جیکر بنا دیا گیا۔

مسلم لیگ ن کی پارلیمانی کمیٹی کے 12ویں اجلاس سے خطاب کر نواز شریف نے کہا کہ کافی عرصے بعد اپنے بہت سارے ساتھیوں سے ملاقات ہو رہی ہے، بیچ میں کافی گیپ آگیا، حالات کہاں سے کہاں لے گئے۔

نواز شریف کا کہنا ہے کہ وہم و گمان میں نہیں تھا بیٹے سے تنخواہ نہ لینے پر فارغ کر دیا جائے گا، تقریباً ایک لاکھ روپے تنخواہ نہ لینے پر مجھے فارغ کیا گیا، مقصد صرف وزیرِ اعظم کو نکالنا تھا اور ایک سلیکٹڈ کو لانا تھا۔

انہوں نے کہا کہ آئین، قانون میں گنجائش نہ ہونے کے باوجود وزیرِ اعظم کو نکالنا تھا، بجلی لوڈ شیڈنگ ختم ہو رہی تھی، سی پیک پاکستان آرہا تھا، کہا جا رہا تھا پاکستان جی 20 میں شامل ہو جائے گا۔

سابق وزیرِ اعظم کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کو ہم نے خدا حافظ کہا تھا، ہم غیر ملکی قرضے واپس کر رہے تھے، ہم نے اپنے دور میں قرضے لیے نہیں واپس کیے تھے، ہم پاکستان میں وہ کام کر سکتے ہیں جو دوسری قومیں نہیں کر سکتیں، ہمیں نظر کھا گئی، کسی کو پوچھنا چاہیے تھا صبح کا وزیرِ اعظم شام کو ہائی جیکر کیسے بن گیا۔

مسلم لیگ ن قائد نے مزید کہا کہ آر ٹی ایس بٹھا کر جو حکومت لائی گئی وہ ایک موٹر وےبھی نہ بنا سکی، اگر ہماری حکومت نہیں توڑی جاتی تو وہ موٹر وے بن جاتی، کس نے کراچی سے دہشت گردی کو ختم کیا، سندھ میں ہم نے کوئلہ نکالا، بجلی اس سے بن رہی ہے، کراچی میں ہم نے 2200 میگا واٹ پاور پلانٹ قائم کیا۔

ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ چترال والوں سے پوچھوں گا ٹنل مجھ سے بنواتے ہیں ووٹ کسی اور کو دیتے ہیں، کراچی سے حیدرآباد جو بنائی گئی وہ موٹر وے نہیں، ہم غریبوں کا دکھ بانٹنے والے لوگ ہیں۔

Share this Article
- اشتہارات -
Ad imageAd image