Sargaram | Newspaper

جمعرات 30 مئی 2024

ای-پیپر | E-paper

’پٹرولیم قیمتوں میں کمی کے فوائد عوام تک پہنچانے کی ہدایت‘

Share

نگران وزیراعظم نے ہدایت کی ہے کہ ذخیرہ اندوزوں اور ناجائز منافع خوروں کے خلاف آہنی ہاتھ سے نمٹا جائے اور اسمگلروں و بجلی چوروں کو کوئی رعایت نہ دی جائے.

نگران وزیرِ اعظم انوار الحق کاکڑ کی زیرِ صدارت پیٹرلیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے اثرات عام آدمی تک پہنچانے اور اشیاءِ خورونوش و ضروریہ کی قیمتوں میں کمی یقینی بنانے کے حوالے سے جائزہ اجلاس آج اسلام آباد میں منعقد ہوا۔

اجلاس کو پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں حالیہ کمی اور اسمگلنگ و بجلی چوری کے خلاف آپریشن کے نتائج کے حوالے سے آگاہ کیا گیا. اجلاس کو بتایا گیا کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں حالیہ کمی کی بدولت مہنگائی کی شرح میں 1.7 فیصد کمی ہوئی جو گزشتہ ایک برس میں سب سے ذیادہ کمی ہے.

وزیرِ اعظم نے ہدایت کی کہ پیٹرول کی قیمت میں 12.38 فیصد اور ڈیزل کی قیمت میں 4.7 فیصد کمی کے فوائد عام آدمی تک جلد سے جلد پہنچائے جائیں. انہوں نے مزید کہا کہ ڈالر کی قیمت میں استحکام اور پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی بدولت مجموعی طور پر 41 ارب روپے کی بچت ہوئی ہے جس کا ریلیف عام آدمی تک پہنچے گا.

وزیر اعظم نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی، ڈالر کی قیمت میں استحکام اور سمگلنگ کی روک تھام کے اثرات عام آدمی تک پہنچانے کے لئے تمام انتظامیہ کی کوششوں کو سراہا۔

وزیرِ اعظم نے کہا کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے فوائد کو عام آدمی تک پہنچانے کیلئے اقدامات کو تیز تر کیا جائے اور ہدایت کی کہ ذخیرہ اندوزوں اور منافع خوروں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے.

وزیرِ اعظم نے مزید کہا کہ بجلی چوری کی روک تھام اور اسمگلنگ کے خلاف آپریشن سے عام صارف کو فائدہ ہوا. انسداد اسمگلنگ آپریشن کا براہِ راست فائدہ عوام کو ہو رہا ہے. بلوچستان میں گندم کی قیمت میں 18 فیصد اور چینی کی قیمت میں اوسطاً 16 فیصد کمی خوش آئند ہے.

اجلاس کو بتایا گیا کہ انتظامیہ کی کوششوں کی بدولت قومی سطح پر 24 اشیاءِ ضروریہ کی قیمتوں میں کمی واقع ہوئی ہے. زرعی پیداوار، بجلی، کرایوں اور صنعتی پیداوار کی قیمتوں میں خاطر خواہ کمی یقینی بنائی جارہی ہے. وزارت منصوبہ بندی کی جانب سے اشیاءِ خورونوش و ضروریہ کی قیمتوں کی مانیٹرنگ اور فیصلہ سازی کیلئے قومی ادارہ شماریات کی تیار کردہ Decision Support System for Inflation ایپ کا استعمال کیا جارہا ہے.

اجلاس میں سندھ، خیبر پختونخوا اور پنجاب کے وزراءِ اعلی اور بلوچستان کے چیف سیکرٹری نے اپنے اٹھائے گئے اقدامات پر بھی بریفنگ دی.

اجلاس کو آگاہ کیا گیا کہ چاروں صوبوں میں صوبائی انتظامیہ کے اقدامات کی بدولت سفری کرایوں میں اوسطًا 10 فی صد کمی واقع ہوئی ہے. ذخیروہ اندوزوں اور ناجائز منافع خوروں کے خلاف آپریشن کیا جارہا ہے. ضلعی انتظامیہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے نتیجے میں اشیاءِ خورونوش و ضروریہ کی قیمتوں میں کمی یقینی بنا رہی ہے.

اجلاس میں نگران وفاقی وزراء مرتضی سولنگی، گوہر اعجاز، کوثر عبداللہ ملک، سمیع سعید، محمد علی اور متعلقہ اعلی حکام نے شرکت کی.

نگران وزراء اعلی محسن نقوی، جسٹس (ر) مقبول باقر، اعظم خان، چاروں صوبوں کے چیف سیکرٹریز اور متعلقہ اعلی حکام نے وڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شرکت کی.

اجلاس کو تمام صوبوں میں اشیاءِ خورونوش و ضروریہ اور قومی سطح پر مہنگائی کے تناسب میں کمی کے اعشاریئے پیش کئے گئے. اجلاس کو مختلف اشیاءِ ضروریہ بشمول خشک راشن، اجناس، آٹے، چینی، گھی و تیل، سبزیوں و پھلوں گوشت وغیرہ کے نرخوں میں کمی کے حوالے سے بھی بریفنگ دی گئی. اجلاس کو بتایا گیا کہ تمام صوبوں میں پرائس مجسٹریٹ، ضلعی سطح پر پیٹرولیم مصنوعات میں کمی کے فوائد عام آدمی تک پہنچانے کیلئے سرگرم ہیں.

Share this Article
- اشتہارات -
Ad imageAd image