Sargaram | Newspaper

بدھ 24 اپریل 2024

ای-پیپر | E-paper

چین دنیا کا تیز ترین انٹرنیٹ لے آیا، 1 سیکنڈ میں 150 فلمیں ڈاؤن لوڈ کرنا ممکن

Share

چین نے دنیا کی سب سے زیادہ تیز ترین انٹرنیٹ سروس متعارف کروا دی جس کی رفتار کا اندازہ اس بات سے بخوبی لگایا جا سکتا ہے کہ اس کے ذریعے 1 سیکنڈ میں 150 فلمیں کی ڈاؤن لوڈنگ ہو سکے گی۔

ساؤتھ چائنا مارنگ پوسٹ کے مطابق چینی کمپنیوں نے دنیا کا تیز ترین انٹرنیٹ نیٹ ورک لانچ کیا جن کا دعویٰ ہے کہ یہ 1.2 ٹیرا بِٹ فی سیکنڈ کی رفتار سے ڈیٹا منتقل کر سکتا ہے۔

نئی متعارف کروائی گئی سروس کی رفتار موجودہ انٹرنیٹ سے دس گنا زیادہ ہے۔ یہ سنگھوا یونیورسٹی، چائنا موبائل، ہواوے ٹیکنالوجیز اور سرنیٹ کارپوریشن کا مشترکہ منصوبہ ہے۔

3,000 کلومیٹر پر پھیلا ہوا یہ نیٹ ورک بیجنگ، ووہان اور گوانگزو کو ایک وسیع آپٹیکل فائبر کیبلنگ سسٹم کے ذریعے جوڑتا ہے اور اس میں 1.2 ٹیرا بِٹس (1,200 گیگا بٹ) فی سیکنڈ کے حساب سے ڈیٹا منتقل کرنے کی صلاحیت ہے۔ دنیا کے زیادہ تر انٹرنیٹ بیک بون نیٹ ورک صرف 100 گیگا بٹس فی سیکنڈ کی رفتار سے کام کرتے ہیں۔

بیجنگ، ووہان اور گوانگ زو کنکشن چین کے مستقبل کے انٹرنیٹ ٹیکنالوجی انفراسٹرکچر کا حصہ ہے۔ سروس کو جولائی میں فعال کیا گیا جبکہ اس کا باضابطہ آغاز پیر سے ہوئی۔ اس نے تمام آپریشنل ٹیسٹوں کو پیچھے چھوڑ دیا اور بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

Share this Article
- اشتہارات -
Ad imageAd image