Sargaram | Newspaper

اتوار 14 اپریل 2024

ای-پیپر | E-paper

کلاؤن فِش، اپنی مرضی سے جنس تبدیل کرنے والی مچھلی

Share

دنیا میں ویسے تو اور بھی ایسے جاندار ہیں جو اپنی جنس کو تبدیل کرسکتے ہیں لیکن کلاؤن فِش میں یہ خصوصیت ایک اور وجہ کی بنا پر اسے دوسرے جانداروں سے ممتاز بناتی ہے۔

کلاؤن فِش اپنی مرد جنس کو مادہ میں تبدیل کرتی ہے تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ اس کا ایک گروپ نسل کو آگے بڑھانے کا کام جاری رکھ سکے۔

کلاؤن فِش اس لحاظ سے دوسروں منفرد ہے کہ اس کا یہ عمل عمر یا جسامت کے لحاظ سے پہلے سے متعین نہیں ہوتا بلکہ یہ نسل بڑھانے کی سماجی ضرورت کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنی جنس تبدیل کرتی ہے۔

کلاؤن فش سمندری انیمونز (پھول کی طرح دیکھنے والے سمندری جانداروں) کے درمیان گروہوں کی صوعرت میں رہتی ہیں۔ ایک گروہ ایک بالغ نر، ایک بالغ مادہ اور بہت سی چھوٹی نر کلاؤن فِش پر مبنی ہوتا ہے جو جنسی طور پر بالغ نہیں ہوتیں۔

جب مادہ مچھلی مر جاتی ہے تو اس کا مرد ساتھی اپنی جنس بدل کر اس کی جگہ لے لیتا ہے تاکہ گروہ میں موجود باقی کلاؤن فِش میں سے کوئی ایک بالغ نر نسل بڑھانے کی ذمہ داری سنبھال لے۔

Share this Article
- اشتہارات -
Ad imageAd image