Sargaram | Newspaper

ہفتہ 22 جون 2024

ای-پیپر | E-paper

25 سال مسلسل جدوجہد، 23 مرتبہ فیل ہونیوالے سکیورٹی گارڈ نے ‘ایم ایس سی’ کا امتحان پاس کرلیا

Share

تعلیمی اداروں میں پڑھنے والے طالبعلم اگر اپنی جماعت، بورڈ کے امتحانات یا یونیورسٹی کے کسی پرچے میں فیل ہوجائیں تو وہ وہیں ہمت ہار جاتے ہیں اور دوبارہ امتحان دینے سے خوفزدہ ہوتے ہیں کہ آیا پھر اس میں کامیاب ہوں گے یا نہیں۔

لیکن آج ہم آپ کو ایک ایسے سکیورٹی گارڈ سے متعلق بتائیں گے جنہوں نے ‘ہمت نہ ہارنے’ کی مثال دنیا بھر میں قائم کی اور لوگوں کو دکھایا کہ بار بار ناکامی کے باوجود اگر آپ اپنے مقصد پر ثابت قدم رہیں تو کچھ بھی ممکن ہے اور ایک دن کامیابی ضرور آپ کا مقدر بنے گی۔

یہ کہانی ہے بھارت کی ریاست مدھیہ پردیش کے شہر جبل پور سے تعلق رکھنے والے راج کرن براؤا  کی ہے، جن کا نہ ہی گھر تھا اور نہ ہی بہت مضبوط آمدنی کا ذریعہ، لیکن ایک خواب تھا جو اب حقیقت کا روپ دھار چکا ہے۔

56 سالہ راج سکیورٹی گارڈ کے طور پر کام کرتے ہیں اور انہوں نے 25 سال بعد ایم ایس سی (میتھس) کا امتحان پاس کرکے ایک سنگ میل عبور کیا، راج 23 مرتبہ اس امتحان میں فیل ہوئے۔

فیملی کے تعاون کی کمی، مالی مجبوریوں اور غیر مستحکم روزگار سے نبرد آزما ہونے کے باوجود راج کے دل میں ریاضی کے مضمون کے لیے شوق اور دلچسپی تھی جسے وہ ترک نہیں کرسکے، وہ سکیورٹی گارڈ کی نوکری کرتے ہوئے دو دو شفٹس کیا کرتے تھے، اس کے علاوہ بھی انہوں نے ہر طرح کی نوکری کی تاکہ وہ ماسٹرز کی ڈگری حاصل کرسکیں۔

اس سفر میں انہیں اپنی فیملی کی مخالفت کا سامنا بھی کرنا پڑا جو تعلیم کے خلاف تھے، 2021 میں راج کی زندگی میں اہم موڑ آیا جب انہوں نے بالآخر ایم ایس سی کا امتحان پاس کیا۔

Share this Article
- اشتہارات -
Ad imageAd image